Post has shared content
Twitter:@AamirLiaquat @BushraAamir

[مُرسی کے”بھیانک جرائم“...لاؤڈ اسپیکر…ڈاکٹرعامرلیاقت حسین]   
Twitter:@AamirLiaquat @BushraAamir

[مُرسی کے”بھیانک جرائم“...لاؤڈ اسپیکر…ڈاکٹرعامرلیاقت حسین]   
Photo

Post has shared content

امان رمضان
یکم رمضان سے چاند رات تک
ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کے ساتھ
صرف جیو پر۔۔۔

"Get all Updates of Amaan Ramazan"
https://www.facebook.com/Amirliaquatslover
‎●▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬ஜ۩۞۩ஜ▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬●
    PLEASE MUST LIKE THIS PAGE
https://www.facebook.com/Amirliaquatslover
●▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬ஜ۩۞۩ஜ▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬●

Twitter:@AmirLiaquat
امان رمضان
یکم رمضان سے چاند رات تک
ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کے ساتھ
صرف جیو پر۔۔۔
"Get all Updates of Amaan Ramazan"
Photo

Post has shared content
محمودہ سلطانہ فائونڈیشن... دکھیاروں کی امداد کے لیے ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کا ساتھ دیجیے۔۔۔

محمودہ سلطانہ فائونڈیشن
دکھیاروں کی امداد کے لیے ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کا ساتھ دیجیے۔۔۔
آپ اپنی زکوٰۃ، خیرات، عطیات  یو بی ایل بینک میں جمع کرواسکتے ہیں

پاکستان میں عطیات جمع کروانے کے لیے:۔۔
بینک کا نام: یونائیٹڈ بینک لمیٹڈ، الرحمان برانچ، آئی آئی چندریگر روڈ، کراچی
اکائونٹ ٹائٹل: محمودہ سلطانہ فائونڈیشن
اکائونٹ نمبر 4-3033-010,
برانچ کوڈ: 1234
UNILPKKA سوئفٹ کوڈ:۔
فون نمبر: 0300.2086414

بیرون ملک عطیات جمع کروانے کے لیے:۔
بینک کا نام:
BANK OF AMERICA, USA
اکائونٹ ٹائٹل: محمودہ سلطانہ فائونڈیشن
اکائونٹ نمبر: 2173976243
وائر ٹرانسفر: 026009593
ٹیکس آئی ڈی: 45.4765986
آپ اپنے عطیات پے پال کے ذریعے بھی بھیج سکتے ہیں
اہل ایمان سے ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کی دردمندانہ اپیل!۔
روزہ افطار کرانے کا اجر راہِ الٰہی میں غلام آزاد کرانے کے مساوی ہے
روزہ افطار کرائیں
100روپے فی افطار پیکٹ
روزانہ ہزاروں افطار پیکٹس کی تقسیم

بھوکے کو کھانا کھانے والے پر فرشتے رحمت بھیجتے ہیں
مسکین کو کھانا کھلائیں
۔120  روپے فی پیکٹ
ایک وقت اور ایک شخص کے لیے

وزٹ کیجیے:
www.msftrust.org
Photo

Post has shared content
KARACHI: On the occasion of shab-e-Barat, one of the great and different transmissions of Geo TV, “Laila tul Mubarka” has broken all the records of popularity in TV channels history.
#TheNews #LailaTulMubarka@AamirLiaquat
Geo’s Shab-e-Barat Transmission Breaks Record Of Popularity - The News International
     
KARACHI: On the occasion of shab-e-Barat, one of the great and different transmissions of Geo TV, “Laila tul Mubarka” has broken all the records of popularity in TV channels history.
According to impartial rating organisation, between fourteen and fifteen Shaban’s night from 9pm to 3am Geo outclassed all the channels. This great transmission organised by Geo’s Vice President Amir Liaquat Hussain had left all the channels behind in popularity. Some media agencies claimed with proof that on Shab-e-Barat night no other channel was watched except Geo as the rating of other channels remained very low. The unique style of Dr. Amir liaquat Hussain made the real difference.
The enthralling recitation of Na’at by Dr Amir Liaquat Hussain attracted thousands of viewers and they kept on sticking to their television screen.
With reference to the Holy Quran and Hadiat, the impressive style of the host moved the people belonging to all the sects. This is the proof of success issued by an impartial rating organisation.
Geo network is very thankful to their viewers as the special transmission got great success and became very famous among the viewers.
http://www.thenews.com.pk/Todays-News-2-186862-Geos-Shab-e-Barat-transmission-breaks-record-of-popularity
www.aamirliaquat.com, Twitter:@AamirLiaquat
Photo

Post has shared content
میں منتظر ہوں آ پ کا، کیا آپ آئیں گے؟
ہم مل کر اس مہینے میں رب کو منائیں گے

Post has shared content
Dr Amir Liaquat warns terrorists of God’s wrath
Dr Amir Liaquat warns terrorists of God’s wrath

KARACHI: While expressing sorrow over the martyrdom of innocent police personnel as a result of assassination attempt on Sindh High Court (SHC) judge Justice Maqbool Baqir, Dr Amir Liaquat Hussain said that happening of such a gruesome act of terrorism just after hours of Shab-e-Barat and few days before the start of Ramazan is point of ponder for every Pakistani and is highly condemnable.
Dr Amir expressed these views while hosting Geo’s renowned programme ‘Aalim aur Alam.’ He said that happening of such terrorism incident was not expected few days before Ramazan but perhaps there was no respect of month or religious values for the terrorists. He further said, “We are welcoming Ramazan with the slitting of throats which is worst kind of act.”
Dr Amir made sympathetic appeal to the terrorists that yet there was a time to bow their foreheads before God otherwise they should remember the grip of God is very severe. He expressed condolence with the bereaved families of deceased personnel and said the impression that the cops are corrupt is not correct because their condition is so pitiable that they are living from hand to mouth.
While thanking the viewers on getting public recognition and extraordinary success of Geo’s Shab-e-Barat transmission, Dr Liaquat said that all the channels in the media industry deserve admiration for holding Noorani Mehafils during Shab-e-Barat.
Later, on the demand of host and audience, renowned Naat Khawan Hafiz Ahmad Raza Qadri recited naat, which is highly appreciated.At the last part of the programme, famous spiritual personality Maulana Bashir Ahmed Farooq Qadri told the solution of problems in the light of Quran and Sunnah. While answering the questions of the viewers he said that recitation of ‘Surrah Muzamil’ protects us from calamities and recitation of ‘Ya Hayi Ya Halim’ protects us from jaundice and other diseases.Later, Dr Amir Liaquat said that a remarkable transmission is going to be presented on Geo in connection with Ramazan after a few days.

www.aamirliaquat.com, Twitter @aamirliaquat
Photo

Post has shared content

جیو پر شب برأت کی عظیم الشان نشریات ، حاضرین و ناظرین کی بھرپور پذیرائی
ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کے دل نشین انداز میزبانی اور دلکش ثنا خوانی نے سماں باندھ دیا، ہر آنکھ اشک بارعالم اور عالم اسپیشل میں تمام مکاتب فکر کے جید علمائے کرام کا لیلۃ المبارکہ کی فضیلت پر اظہار خیال ٹیم جیو کے معروف ثناخوانوں کا پر سوز نذرانہ عقیدت، مولانا بشیر فاروق قادری نے دعا کرائی..!
#JangNews: #Lailatul_Mubarakah with @AamirLiaquat#GeoTV
جیو پر شب برأت کی عظیم الشان نشریات ، حاضرین و ناظرین کی بھرپور پذیرائی
ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کے دل نشین انداز میزبانی اور دلکش ثنا خوانی نے سماں باندھ دیا، ہر آنکھ اشک بار
عالم اور عالم اسپیشل میں تمام مکاتب فکر کے جید علمائے کرام کا لیلۃ المبارکہ کی فضیلت پر اظہار خیال
ٹیم جیو کے معروف ثناخوانوں کا پر سوز نذرانہ عقیدت، مولانا بشیر فاروق قادری نے دعا کرائی
 ---------------------------:-
کراچی( اسٹاف رپورٹر) ۴۱ اور ۵۱ شعبان کی درمیانی شب نجات و بخشش سے معمور ساعتوں میں دنیا بھر میں براہ راست نشرہونے والی جیوٹیلی ویژن نیٹ ورک کی عظیم الشان ٹرانسمیشن میں وائس پریذیڈنٹ ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کے دل آویز انداز میزبانی، خوبصورت انداز تکلم اور دل نشیں ثناء خوانی نے سیکڑوں حاضرین اور ٹی وی اسکرین کے سامنے موجود کروڑوں ناظرین پر سرشاری کی ایک کیفیت طاری کردی اور ایک پرکیف روحانی سماں باندھ دیا۔ ”لیلة المبارکہ“کے عنوان سے مسلسل سات گھنٹے تک پوری دنیا میں براہ راست پیش کی جانے والی اس فقید المثال نشریات میں گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر عامرلیاقت حسین نے کہا کہ یہ انعامات و نجات کی رات ہے، اس رات اللہ رب العزت کا دریائے رحمت جوش میں ہوتا ہے اور وہ کثرت سے اپنے بندوں کے گناہ معاف فرماتا ہے اور اس عزت والی رات کے وسیلے سے مسلمانوں کی ایک کثیر تعداد کو جہنم سے نجات کا مژدہ سنایا جاتا ہے۔ شب برأت کی روح پرور ساعتوں کو آتش بازی کی نذرکرنے والے بعض عاقبت نااندیشوں کی مذمت کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ اس رات بم پٹاخوں کی وجہ سے لوگوں کی عبادات میں خلل پڑتا ہے اورامراض قلب میں مبتلا افراد کے لیے یہ دھماکے جان لیوا ثابت ہوتے ہیں اس لیے ان سے اجتناب ضروری ہے ۔ قرآن واحادیث پر مبنی حوالہ جات سے سجی اپنی متاثرکن گفتگوسے قبل ڈاکٹر عامر لیاقت حسین نے بارگاہ خداوندی میں ”الٰہی تیری چوکھٹ پرسوالی بن کے آیاہوں“ پڑھ کرایک سماں باندھ دیا اوروقفے وقفے سے نعتوں کے نذرانے پیش کرکے حاضرین پر وجد کی کیفیت طاری کردی۔ صبح صادق تک جاری رہنے والی شب برأت کی اس پُرنور نشریات کا آغاز ملک کے ممتاز قاری ابراہیم کاسی کی پُرلحن تلاوت کلام پاک سے ہوا اورنشریات کے دوران ٹیم جیو کے معروف نعت خواں الحاج عمران شیخ عطاری، حافظ احمد رضا قادری، ریحان قادری، حافظ طاہر قادری اور محمد ریحان قریشی وقتاً فوقتاً حاضرین و ناظرین کی فرمائش پر پروردگار کی حمد اور آقائے نامدار صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی ثناخوانی سے محفل میں عشق کے رنگ بکھیرتے رہے۔ اس موقع پر ”عالَم اور عالِم اسپیشل“ میں تمام مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والے ممتاز علمائے کرام نے شرکت کی، شعبان کی فضیلت اور شب برأت کی اہمیت پر اظہار خیال کیا اور بعض امور پر حاضرین کے سوالات کے ہلکے پھلکے انداز میں جوابات بھی دئیے۔ اس موقع پر ناظرین کی رہنمائی کے لیے علمائے کرام کاجو خصوصی پینل ترتیب دیاگیاتھا اُس میں جماعت اہل سنت سندھ کے نائب امیرعلامہ سید حمزہ علی قادری، جامعہ دارالخیرکے مہتمممفتی عثمان یار خان،ادارہ تنظیم المکاتب کے سربراہ علامہ سید رضی جعفر نقوی،تنظیم المساجد اہل سنت پاکستان کے سربراہ مفتیعابد مبارک اورمرکزی جمعیت اہل حدیث کراچی کے ناظم اعلیٰقاری خلیل الرحمن جاویدشامل تھے۔ ڈاکٹر عامر لیاقت سے گفتگو کے دوران طارق روڈکراچی پر واقع قبرستان سے ویڈیولنک کے ذریعے عوام کی اصلاح کرتے ہوئے مفتی محمد نعیم مدنی نے زیارت قبور کے آداب بیان کرتے ہوئے کہا کہ متعلقہ اداروں کی جانب سے شب برأت کے موقع پر روشنی کے مناسب انتظامات کی موجودگی میں قبروں پر دیے روشن کرنے کاکوئی جواز نہیں کیونکہ اسلام نے آگ سے دور رہنے کا حکم دیا ہے جبکہ لاہور کے تاریخی میانی صاحب قبرستان سے براہ راست گفتگو کرتے ہوئے مولانا ضیاء الحق نقشبندی کا کہنا تھا کہ اگرچہ زائرین کی بہت بڑی تعداد شریعت کے دائرے میں رہتے ہوئے اپنے پیاروں کی قبروں پر حاضری دے رہی ہے تاہم بعض کم علم افراد احتیاط کا دامن چھوڑ دیتے ہیں جن کی اصلاح کی ضرورت ہے۔ نشریات کا اہم ترین حصہ اُن دکھی افراد کی شرکت تھی جن کے پیارے اِس سال سانحہ بلدیہ ٹاوٴن،سانحہ عباس ٹاوٴن،ٹارگٹ کلنگ اور دیگر ناگہانی حادثات میں جاں بحق ہوگئے ۔ متاثرین کے ساتھ ڈاکٹرعامرلیاقت حسین کی گفتگو کے دوران رقت آمیز مناظر دیکھنے میں آئے اور متاثرین کی داستان غم سن کر ہر آنکھ اشکبار اور ہر چہرہ رنج والم کاپیکربن گیا۔اس موقع پر دل گرفتہ میزبان نے اُنہیں اپنائیت کااحساس دلاتے ہوئے محبت اور انسیت کے جملے اداکیے اور محمودہ سلطانہ فاوٴنڈیشن کی جانب سے وہاں موجودہردکھی خاندان کو فی کس پچاس ہزار روپے کا عطیہ بھی دیا۔ نشریات کے اختتامی لمحات میں معروف روحانی شخصیت اورسیلانی ویلفیئرٹرسٹ انٹرنیشنل کے سربراہ مولانامحمدبشیر فاروق قادری نے حاضرین وناظرین کے ساتھ گلوگیر ہوکر رب کے حضور فریاد اورالتجائیں کیں اور اس عزت والی شب کا واسطہ دے کر گناہوں کی بخشش طلب کی۔ نشریات کے دوران وہاں موجود حاضرین نے مثالی نظم وضبط کامظاہرہ کیا ،نشریات میں شرکت کے ساتھ ساتھ نفلی عبادات کی ادائیگی میں بھی مصروف رہے اورمحفل کے اختتام پرروزے داروں نے جیو کے زیراہتمام پرتکلف سحری سے رمضان المبارک کا باقاعدہ استقبال بھی کیا۔ بعدازاں جنگ،جیو اور جیو نیوزکے دفاتر میں دنیا بھرمیں بسنے والے ہزاروں ناظرین نے کامیاب اور متاثرکن نشریات پیش کرنے پر جیونیٹ ورک کی کاوشوں کوسراہااورمبارکبادپرمبنی اپنے پیغامات ریکارڈ کرائے جن میں ڈاکٹر عامر لیاقت حسین سے محبت بھرے جذبات کا اظہار
www.aamirliaquat.com, Twitter:@AamirLiaquat.
Photo
Photo
#JangNews: #Lailatul_Mubarakah with @AamirLiaquat #GeoTV جیو پر شب برأت کی عظیم الشان نشریات ، حاضری
2 Photos - View album

Post has shared content
 #Lailatul_Mubaraka Fazilat, Ibrat, Najat  - Live Transmission with @AamirLiaquat#GeoTV, 24 June, Monday
یہ رات شکرِ انعامات بھی، برات بھی ہے۔۔۔
چراغِ قبر بھی، پروانہٗ نجات بھی ہے
لیلۃ المبارکۃ
فضیلت، عبرت، نجات
انعامات کی رات، بخشش کی ساعات
نجات کی پر کیف گھڑیوں میں نعمتوں کی برسات
 
#Lailatul_Mubaraka Fazilat, Ibrat, Najat  - Live Transmission with @AamirLiaquat#GeoTV, 24 June, Monday
یہ رات شکرِ انعامات بھی، برات بھی ہے۔۔۔
چراغِ قبر بھی، پروانہٗ نجات بھی ہے
لیلۃ المبارکۃ
فضیلت، عبرت، نجات
انعامات کی رات، بخشش کی ساعات
نجات کی پر کیف گھڑیوں میں نعمتوں کی برسات
 
آئیے! شب برات کی نجات سے معمور ساعتوں میں ماہ شعبان کی فضیلت، آداب قبر اور قدرت کے بیش بہا انعامات کا تذکرہ کریں، ان کی نعتیں پڑھیں جو شافع محشر ہیں اور بروز حشر ہم سیاہ کاروں کی شفاعت فرمائیں گے ان کے زخموں پر مرہم رکھیں جن کے پیارے مختلف سانحات میں ان سے جدا ہوگئے اور اس بابرکت شب کا واسطہ دے کر اپنے رب سے بخشش کی التجا کریں۔

عالم اور عالم اسپیشل: شب برات کی اہمیت و فضائل اور انعامات خداوندی پر ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کے ساتھ جید علمائے کرام کی بصیرت افروز گفتگو

 14شعبان المعظم 1434ھ، 24 جون 2013ء، پیر کی شب 9 بجے سے
براہ راست خصوصی نشریات ۔۔۔ صرف جیو پر!۔۔
علمائے کرام: علامہ سید حمزہ علی قادری، مفتی محمد عثمان یار خان، علامہ سید رضی جعفر نقوی، قاری خلیل الرحمان جاوید
ثنا خوان: عمران شیخ عطاری، احمد رضا قادری، ریحان قادری، ریحان قریشی اور حافظ طاہر قادری
دعائیہ کلمات: مولانا بشیر فاروق قادری
http://geovision.geo.tv/lailatul-mubaraka-fazilat-ibrat-nijat/
www.aamirliaquat.com, Twitter:@AamirLiaquat

Post has shared content

زیارت کے منکر...لاؤڈ اسپیکر…ڈاکٹرعامرلیاقت حسین
 میرے پیارے قائدِ اعظم! مجھے یقین ہے کہ آپ کی قبر جنّت کے باغوں میں سے ایک باغ ہوگی
زیارت کے منکر...لاؤڈ اسپیکر…ڈاکٹرعامرلیاقت حسین
    :--------------------------------:
[زیارت کے منکر...لاؤڈ اسپیکر…ڈاکٹرعامرلیاقت حسین]     
میرے پیارے قائدِ اعظم! مجھے یقین ہے کہ آپ کی قبر جنّت کے باغوں میں سے ایک باغ ہوگی اور آپ عالمِ برزخ کے اعلیٰ ترین مقامات میں سے کسی ایک مقام پر اپنے ہی جیسے بے شمار پیاروں کے ساتھ اُس گھڑی کے بے چینی سے منتظر ہوں گے جب حشر بپا ہونے کا صور پھونکا جائے گا…مجھے اِس میں بھی کوئی شک نہیں کہ آپ ”حکمی شہادت “کے درجے پر فائز ہیں اور یقیناً اپنا رزق پارہے ہیں لیکن ہمیں اِس کا شعور نہیں…”کسمپرسی“ پر تو یوں ہی الزام لگادیاگیا ہے ورنہ حقیقت تو یہ ہے کہ آپ کی جان کسمپرسی نے نہیں بلکہ ”اپنوں“ نے ہی لی تھی…میرے بے مثال رہبر! آپ مجھے نہیں جانتے لیکن میں آپ ہی کے بنائے ہوئے پاکستان میں پیدا ہوا،پلا بڑھا اور یہیں کا کھارہا ہوں، سچ پوچھیے تو آپ کے احسانات کے بوجھ تَلے دبا ایک ایسااحسان فراموش ہوں جسے آپ کے پاکستان سے زیادہ ہروقت اپنے ہونے کا یقین ہے حالانکہ پاکستان ہے تو میں ہوں ورنہ تو میں صرف ”میں“ ہی تو ہوں…اور اللہ کی اِس وسیع و عریض کائنات میں کسی ”میں“ کی کبھی گنجائش تھی اور نہ ہوگی، ہر ”میں“ کو لازم ہے کہ وہ ”ہم“ میں فنا ہواور عجز کی لہروں کے سہارے حقیقت کے ساحل تک پہنچے لہٰذامیں یہ اقرار کرتا ہوں کہ پاکستان میں آزادی کی سانس لینے والے ہر نفس کی حیات کا ثواب اللہ کے حکم کے ذریعے آپ کی روح تک بالضرور پہنچایاجاتا ہے اور 1948سے لے کر اب تلک آپ کے درجات میں مسلسل اضافہ ہی ہورہا ہے…یہ الگ بات ہے کہ کچھ کم ظرفوں کے نزدیک پاکستان آپ کا ”قصور“ اور ایک ایسی غلطی ہے جو آپ کو نہیں کرناچاہیے تھی…دراصل یہ وہ ”غلام زادے“ ہیں جن کی زبانیں آقاؤں کے تلووں کے ذائقوں کی عادی ہوگئی تھیں اور یہ اُن کے پیروں پر لگا اپنا ہی تھوک چاٹنے میں مَست رہنا چاہتے تھے مگر آپ نے اِنہیں جھنجوڑا، بازوؤں سے پکڑ کر اُنہیں اُن ہی کے قدموں پر کھڑا کیا اور پاکستان لے آئے …تب ہی سے یہ آپ کے شدید دشمن ہیں، کبھی آپ کی جدّوجہد کا تمسخر اُڑاتے ہیں تو کبھی دو قومی نظرئیے کے چہرے پر اپنی غلاظت مَلتے ہیں، اِنہیں غلامی میں جینا اچھا لگتا تھااور عزّت کی زندگی اِن کی کبھی خواہش ہی نہیں تھی…”اَنا“ کے یہ یتیم بچے مدتوں سے اپنے باپ کی تلاش میں ناکام ہیں اِسی لیے ہر ”بابا“سے نفرت کرتے ہیں اور آپ تو”بابائے قوم “ ہیں پھر یہ کیسے ممکن ہے کہ آپ سے پیار کیا جائے!
مجھے یقین ہے کہ آپ ختمی مرتبت صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے اِس قولِ مقدس سے ضرور آشنا ہوں گے کہ ”جس پر احسان کیا جائے اُس کے شَر سے بچو“…آقا کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم سے سماعت فرما کر یہی نصیحت سیدنا علی کرم اللہ وجہ الکریم نے بھی کی…پیارے قائد! آپ بھول تو نہیں گئے نا کہ آپ نے بھی تواپنے وجود کی تلاش میں ٹھوکریں کھاتی اور ذلیل ہوتی قوم پر احسان فرمایا تھا، ہندو بنیوں اور سکھ سرداروں کے پیچھے چلنے والوں کو آپ نے نیا راستہ دکھلایا تھاپھر یہ کیسے ممکن تھا کہ آپ ہمارے شر سے بچ جاتے…ہم نے ہر موڑ پرآپ کی کردار کشی کی،آپ کو زہریلے القابات سے پکارا، وضع قطع پر تنقید کی، انگریزوں کا ایجنٹ قرار دیا ، سنّی،شیعہ کے پیمانوں میں تراشا یہاں تک کہ آپ کو مارڈالا…او ر ا ب جب اِس پر بھی جی نہیں بھراتوجہاں آپ نے اپنے آخری دو ماہ گزارے تھے اُس زیارت ہی کو تباہ کرڈالا…ہمارے شر کی یہ انتہانہیں تو اور کیا ہے …شاید کسی پر احسان کرکے اُس کے شر سے بچنے کا مطلب ہی یہی ہے کہ اُس پر احسان کیا ہی کیوں جارہا ہے کہ جس پر اللہ نے کرم نہیں فرمایا… لیکن جب اللہ ہی کے حکم سے اُس کا کوئی بندہ کسی پر احسان کرتا ہے تو اللہ چاہتا ہے کہ اُس کا یہ نیک بندہ دیکھ لے کہ اُ س کے رب نے کبھی(معاذ اللہ) غلط نہیں کیا،پروردگار نیکیوں کی بہاریں بھی دینا چاہتا ہے اور انجام سے آگاہی بھی چنانچہ احسان کرنے کی بنا پر نیکیاں عطا فرماتا ہے اور منکرِ احسان کے ضررکے سبب گناہ معاف فرماتا ہے یعنی بیک وقت ہمیں تین انعامات ملتے ہیں…پہلا یہ ”پختہ یقین“ کہ اللہ سے بہتر اُس کے بندوں کو کوئی جان سکتا ہے اور نہ ہی اُس سے بڑھ کر کوئی اُن سے پیار کرسکتا ہے ، اگر اُسی نے اُن کی حالت زار پر رحم نہیں فرمایا ہے تو بے شک اِس میں اُسی کی کوئی حکمت پوشیدہ ہے …دوسرا ”اجرو ثواب“ کہ احسان کرنا ایک محبوب ترین عمل ہے اور اللہ نہیں چاہتا کہ اُس کے بندے اِس عمل سے رک جائیں چنانچہ وہ یہ جانتے ہوئے کہ اُس کے بندے کے فلاں بندے یا بندوں پر احسان کے نتائج تباہ کن ہوں گے وہ غالب حکمت کے ذریعے اُسے پایہٴ تکمیل تک پہنچاتا ہے تاکہ احسان کے اِس عمل پر اُسے اجر،رحمتوں اور نیکیوں کے سائے عطا کیے جائیں…اور تیسرا ”گناہوں میں تخفیف“ کہ چونکہ وہ سب کچھ جانتاہے ،سب اُسی کا علم ہے ،وہی عالم ہے ، وہی بصیر ہے ،وہی خبیر ہے لہٰذا احسان کے مزے لوٹنے والا جب اپنی اوقات پر اُترتا ہے اور احسان کرنے والے کو درد،ٹھیس،دکھ اور تکلیف پہنچاتا ہے تو اُسی لمحے محسن کے نامہٴ اعمال میں لکھے ہوئے گناہوں کی سیاہی دھندلا جاتی ہے یہاں تک کہ گناہ تیزی سے مٹتے چلے جاتے ہیں جبکہ احسان فراموش کے بوجھ میں مزید اضافہ کردیاجاتا ہے، اتنا اضافہ کہ وہ بروزِ حشر گھسٹتا ہوا اپنے رب کی بارگاہ میں حساب کتاب کیلئے حاضر ہوگا…دنیا میں ظاہری طور پرتو یو ں لگتا ہے کہ ناشکرے اور احسان ناشناس کامیاب ہوگئے مگر درحقیقت اُن سے زیادہ خسارے میں کوئی اور نہیں ہوتا…اور یہی ہماری حالت ہے…ہم نے آپ کوبہت رنج دیا ہے ، آپ کے دیے ہوئے تحفے کی قدر نہیں کی،ایک دوسرے کی گردنیں مارنے کو فخر جانا، پاکستانی کے بجائے ہمیشہ لسانی شناخت پر سینے چوڑے کیے ،قربانیوں کو جھٹلایا،اکابرین کی توہین کی،تقسیمِ ہند کو غلطی قرار دیا،مشرقی پاکستان کو کاٹ کر پھینک دیا اور اب باقی ماندہ بچے کھچے پاکستان کو فرقہ واریت،نفرت،انتقام اور غداری کے ناخنوں سے نوچ رہے ہیں…بے شک ہم احسان فراموش ہیں، بلاشبہ ہم سوارتھی(مفاد پرست) ہیں…اپنی رہائش گاہوں،محلوں اور قلعے نما مراکز کی حفاظت کے لئے تو ہم لاکھوں روپے ماہانہ پر محافظوں کی فوجِ ظفر موج لا کھڑی کرتے ہیں لیکن آپ نے جہاں اپنے آخری ایام گزارے وہاں صرف ایک غیر تربیت یافتہ ، غیر مسلح چوکی دار اور صرف ایک پولیس اہل کار تعینات کر کے ہم نے دنیا کو یہ بتلادیاہے کہ ہماری نگاہوں میں آپ کی وقعت کیاہے …پولیس اہل کار تو اپنا فرض نبھاتے اور آخری وقت میں آپ کی زیرِاستعمال اشیا کی حفاظت کرتے ہوئے اپنی جان گنوا بیٹھالیکن اُن کی جان ابھی تک نہیں نکلی کہ جن کے کروفر میں جان بھی آپ ہی کے سبب ہے…میرے عظیم قائد! خدانخواستہ اگر یہی حملہ رائے ونڈ،منصورہ،بلاول ہاؤس،ڈیرہ اسماعیل خان،نائن زیرو یا چارسدہ میں ہوتا توپاکستان کے گلی کوچوں میں آگ لگی ہوتی،اِن مبارک رہائش گاہوں کے تقدس کی پامالی پر سینہ کوبی کرتے ہوئے لاکھوں افراد سے آپ کے بنائے ہوئے آزاد وطن کی غلام راہیں بھر جاتیں،ہڑتال،الٹی میٹم اور پیمانہٴ صبر کے لبریز ہونے کی سرخیاں اپنے دوام کے لیے لہو کی سرخی کی متقاضی ہوتیں…مگریہ آپ کی رہائش گاہ تھی…یہ زیارت ہے قائد اعظم! اور زیار ت کے منکر تو چاہتے ہی نہیں کہ زیارت کی جائے…ہم محسن کشوں نے بتلادیا ہے کہ ہم نالی کے وہ کیڑے ہیں جنہیں خوشبوؤں سے مہکتے بام و در راس نہیں آتے،نہ جانے اب آنے والی نسلیں جب اپنی نصابی کتب میں زیارت کی تصویر پر انگلی رکھ کر ہم سے یہ پوچھیں گی کہ ”یہ کون سی جگہ ہے ؟“ تو ہم کیا جواب دیں گے؟یہ کہ یہاں آپ نے اپنی حیات کے آخری دن گزارے تھے یا پھر یہ کہ آخری دنوں میں بانی پاکستان یہاں رہا کرتے تھے اور پاکستانیوں نے اِسی سبب اِس مقام پر بموں سے حملہ کیا تھاکہ قائد اعظم کی جرأت کیسے ہوئی جو اُنہوں نے یہاں سانسیں لیں،اب اِس کے قیام کا کوئی جواز نہیں،اُڑادو…!!!
http://beta.jang.com.pk/NewsDetail.aspx?ID=102248
www.aamirliaquat.com, Twitter:@AamirLiaquat
Photo

Post has shared content
Top-Rated Soul Touching Holy Transmission on the eve of Shab e Mairaj
Sue Muntaha Woh Chaly Nabhi
Twitter:@AamirLiaquat

Top-Rated Soul Touching Holy Transmission on the eve of Shab e Mairaj
Sue Muntaha Woh Chaly Nabhi
Jazak Allah
Dr. Aamir Liaquat Husain
for such a Soul Touching Holy Transmission on the eve of Shab e Mairaj
GEO also profoundly Thanks to Viewers for watching and making the Transmission Successful
Period: 6th & 7th June 2013 '21:00-03:00'
(All News and Entertainment Channels)
GRPs calculated on 15 mins | Target Audience: Females 15-15, C&S, | Source: TV Meter
Stay Tuned to Geo for Shab e Baraat Special Transmission
on Monday 24th June 2013 with Dr. Aamir Liaquat Husain and...
RAMAZAAN 2013 Coming Soon!
www.aamirliaquat.com, Twitter:@AamirLiaquat
Photo
Wait while more posts are being loaded