Post has attachment

hello everybody, i want to learn english so i need a practic friend, cand you help me? thanks

Post has attachment
Hi,
We take care of your complete legal processing to Set up your Business in Dubai at very Low Cost, and high degree of reliability, we are keen to start long lasting business relationship with you. Please call us on :-0558112007 or mail us on:-hrd@alsumooduae.com
Photo

Post has attachment
Nice video. Tnx. Muslims who are interested in natural healing from an Islamic point of view. Woman who want to get pregnant naturally. ~ http://bit.ly/1FqK80J 

Post has attachment
Please join us: The Soho Loft Conferences will be in New York this Nov 13, Thursday, 8 am to 6 pm, for the "Family Office and Crowdfunding Conference".

For more info and to register: http://www.eventbrite.com/e/2nd-fall-2014-family-office-and-crowdfunding-conference-tickets-11040916679?aff=JMA

To get updates or join discussions, please join these communities - 
Global Real Estate Crowdfunding: https://plus.google.com/u/0/communities/113407199173528432476
The Soho Loft Investor Media:
https://plus.google.com/u/0/communities/114295947499108096818
Photo

Post has attachment

Post has attachment
Contect us if u want to change ur life...
03124839673
Photo

Post has shared content

امان رمضان
یکم رمضان سے چاند رات تک
ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کے ساتھ
صرف جیو پر۔۔۔

"Get all Updates of Amaan Ramazan"
https://www.facebook.com/Amirliaquatslover
‎●▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬ஜ۩۞۩ஜ▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬●
    PLEASE MUST LIKE THIS PAGE
https://www.facebook.com/Amirliaquatslover
●▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬ஜ۩۞۩ஜ▬▬▬▬▬▬▬▬▬▬●

Twitter:@AmirLiaquat
امان رمضان
یکم رمضان سے چاند رات تک
ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کے ساتھ
صرف جیو پر۔۔۔
"Get all Updates of Amaan Ramazan"
Photo

Post has shared content
Twitter:@AamirLiaquat @BushraAamir

[مُرسی کے”بھیانک جرائم“...لاؤڈ اسپیکر…ڈاکٹرعامرلیاقت حسین]   
مُرسی کے”بھیانک جرائم“...لاؤڈ اسپیکر…ڈاکٹرعامرلیاقت حسین
 
سب سے پہلے تو میں یہ واضح کردینا چاہتا ہوں کہ جمعہ کے روزمیں نے جو کالم تحریر کیا تھا اُس کا محمد مُرسی کی معزولی کے شرمناک اقدام سے قطعاً کوئی تعلق نہیں تھابلکہ میرا اشارہ(بلحاظِ عہدہ) ہمارے وطن کے ”مقامی مرسیوں“ کی جانب تھاجن کی غیر فطری افزائش سے جان چھڑانے کے لئے حیرت انگیز طورپراب تلک کوئی فوجی دستیاب ہی نہیں ہے… اب کوئی بُرا مانے یا بھلا مگر سچ تو یہی ہے کہ ہمارے مُرسی(عہدہ ذہن نشین رہے)کم از کم اِس درجے تک تو پہنچ ہی چکے ہیں کہ جن کے لئے اب کسی ”پہنچے ہوئے“ کو ہی آنا پڑے گاورنہ تویہ پوری قوم کو وہاں پہنچانے کا اِرادہ کئے بیٹھے ہیں جہاں سے واپسی مشکل ہی نہیں ناممکن ہے…رہے مصر کے محمد مُرسی،تو اُنہوں نے اقتدارمیں آنے کے بعد سے پوری دنیا کوکوئی ”مسری“ تو کھلائی نہیں تھی کہ اُنہیں ”معاف“ کردیا جاتااور اُن کی شان میں زمین آسمان کے قلابے ملاتے ہوئے اُنہیں امن کا” نوبل “اور جمہوریت کا”فروبل“ ایوارڈ عطا کیاجاتا…عجیب ”بنیاد پرست“ ہے یہ شخص،اپنے نبی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم اور دین سے بے پناہ محبت کرتا ہے ،اِس کی دیدہ دلیری تو ملاحظہ فرمائیے کہ بھری بزم میں دشمنانِ مصطفی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر کہتا ہے کہ ”گستاخانِ رسول کو معاف نہیں کیا جاسکتا،ناموسِ رسالت کا بین الاقوامی قانون بنانا پڑے گا،کسی کو یہ حق نہیں پہنچتا کہ وہ ہمارے آخری نبی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی شانِ ارفع و اعلیٰ میں ادنیٰ سی بھی توہین کا ارتکاب کرے، ہم ایسے دریدہ دہن غلیظوں سے نمٹنا جانتے ہیں“…پھر یہ ”اخوانی خون“ یہیں پربس نہیں کرتا بلکہ اعلانیہ دنیا بھر کے مسلم ممالک کی اخلاقی اور حربی مدد کے لئے بھی کمر بستہ ہے …نبی کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے اولین معاہدے”حِلف الفُضول“ کے اُصولوں کی روشنی میں اِس نے ڈرے بغیر عالمی سامراج کو یہ پیغام دے دیا تھا کہ ’ہم مظلوموں کی مدد کے لئے ہر قسم کی قوت بَروئے کار لائیں گے،اسلامی ممالک میں جہاں جہاں ظلم ہوگا اوراگر بیرونی قوتیں مداخلت کریں گی تو ہم اپنے مسلمان بھائیوں کو تنہا نہیں چھوڑیں گے “…اِسی مُرسی نے کُرسی کو خاطر میں لائے بغیراسرائیل کو متنبہ کیا تھا کہ وہ فلسطینیوں پر مظالم کے منحوس سلسلے کو بند کردے اورایک آزاد فلسطینی ریاست کے قیام میں روڑے اٹکانے کے بجائے اپنی ”ناجائزتعمیرات “ کو منہدم کرنا سیکھے … مصر کا یہ زیرِحراست صدر نہ جانے کتنی مدتوں سے عشقِ رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم میں گرفتار ہے ،جب ہی تو اِس نے شبِ خرابی کے تمام مراکز یعنی نائٹ کلبز اور مہ خانوں پر پابندی لگانے کے انتہائی اِقدام سے بھی گریز نہیں کیا…شرم الشیخ میں جہاں واقعی کسی بھی ”اصل شیخ“ کو شرم آجائے اِس ضدی سربراہ نے ایسی ایسی پابندیاں لگائیں کہ عیاش تلملا اُٹھے، اہرام سے فرعونی ارواح کی نہ رکنے والی چیخ و پکار کے سبب پورا مصر لرز اُٹھا اور رنگین راتوں میں بے حیائی کا رنگ ماند پڑجانے سے دادِ عیش دینے اور لینے والوں کو ہی لینے کے دینے پڑگئے…بھلا اِتنے سنگین اور ”اخلاقی جرائم“ میں ملوث شخص کو کیسے بخشا جاسکتا تھا؟جمہوریت کو اپنی پہلوٹی کی اولاد قرار دینے والے ممالک کی نیندیں حرام ہوچکی تھیں ، رہبرانِ جمہوریت غم غلط کرنے کے لئے ہوائی میں چھٹیاں گزارنے کے باوجود اپنی ہوائیوں کو اُڑنے سے نہیں بچاسکے اوراُن کے ”مسلم ہمنواؤں“ کو جب تاج اُچھلتا اور تخت گِرتا محسوس ہوا تو سب ایک ہی صفحے پر ”یک سطری تحریر“ بن گئے کہ ”مُرسی سے جان چھڑاؤ،مُرسی کو کرسی سے ہٹاؤ“…اور پھر ویسا ہی ہوا جیساہمیشہ ہوتا آیا ہے ،ظاہراً تو وہ مظاہرے تھے مگر درحقیقت”پرکشش مشاہرے“ تھے جنہیں اُنڈیلنے اور درہم ودینار میں کھیلنے کے شوق میں بے چین تحریر اسکوائر پر چیونٹیوں کی طرح نکل آئے،شور مچتا رہا،نعرے لگتے رہے،جھڑپیں یقینی تھیں سو وہ بھی ہوئیں اور پھر پردہٴ سیمیں سے وہی چہرہ نکلا جو ہمارے ہاں بھٹو اور میاں صاحب کے سامنے نکلا تھا…یعنی ”تینوں“ کی پسند کا آرمی چیف۔
راگ پُرانا تھا،آواز نئی،ساز وہی تھے بس سوز مختلف،ملک و قوم کے عظیم ترمفاد اور جمہوریت کی خاطربالآخر مصر بھی کچھ دیر کے لئے پاکستان بن گیااور مُرسی صاحب نے جسے جمہوریت کے حق میں سیسہ پلائی دیوار سمجھا تھا وہ جنرل سیسی اپنے آقا کے حکم See سیسیSee کو وفاداری سے بجالایا…پہلے مُرسی رکنے کوتیار نہ تھے پھر جھکنے پر آمادہ نہ ہوئے لہٰذا انجام بھی واضح تھایعنی اسیری۔
مجھے حیرت تو اِس پر ہے کہ کچھ روز پہلے تک دنیا کو مُرسی کے خلاف عوام کا جم غفیرایک ”فیصلہ“ نظر آرہا تھا مگر اب مُرسی کی حمایت میں لاکھوں انسانوں کا دریائے نیل دکھائی نہیں دے رہا…مُرسی صاحب کے منصب پر قابض ”ضروری صدر“ جنہیں پیار سے سب ”عبوری “ کہہ کر پکارتے ہیں دراصل سبتی(Adventist) فرقے کے ”چھپے رُستم“ ہیں… عدلی منصوراپنے پیارے اسرائیل کا چہیتا ہی نہیں بلکہ سازشی منصوبے کا ایک کامیاب”نتیجہ“ بھی ہے …تاریخ کی ناقابلِ تردید حقیقت کے مطابق قبطی(Coptic) مسیحی امریکہ سے مصرآکر بسنے والے سبتیوں سے شدید نفرت کرتے ہیں کیونکہ سَبتی سر سے دھڑ تک یہودی ہونے کے باوجود اپنے آپ کو مسیحی کہتے ہیں اور قبطی مسیحی اِنہیں” مسیح اللہ“ کا پیروکار ماننے کے لئے تیار نہیں،امریکہ کا راج دلارا عدلی منصور اُس فرقے سے تعلق رکھتا ہے جو حضرت عیسیٰ علیہ السلام کو (معاذ اللہ) اللہ کا بیٹا مانتے ہیں لیکن اتوار کے بجائے ہفتے کے دن کا احترام کرتے ہیں یعنی یہ مسیحیت اور یہودیت کا ایک ایسا ملغوبہ ہے جو1831ء میں اُس وقت معرضِ وجود میں آیا جب امریکہ میں ولیم میلیر نامی ایک شخص کو جھوٹے نبیوں کی طرح وحی آنے لگی گو کہ اُس نے مسیح ہونے کا دعویٰ تو نہیں کیا مگر اپنی ذات کو مسیح اللہ کا پَر تو قرار دیا اور سبت کے دن کو اتوار پر مقدم ٹھہرایا …شروع میں اِن سبتیوں کو ”میلیری“ کے نام سے پکارا جاتا تھا مگر مصر میں آباد ہوتے ہی اِنہیں ”سَبتی“ کہا جانے لگا… اِس سے پہلے اِن خودساختہ مسیحی ”سبتیوں“ کو کوئی جانتا تک نہ تھااور اِسی بنا پر قبطی اِنہیں مسیحی نہیں بلکہ یہودی قرار دیتے ہیں…چنانچہ اب یہی کہنا بہتر ہوگا کہ مصر کے منصبِ صدارت پر ایک مسلمان نہیں بلکہ یہودی فائز ہے اور ظاہر ہے کہ اسرائیل کیلئے یہ ایک آئیڈیل صورتحال ہے…مصر میں مسلمانوں کے بعد اکثریتی فرقہ قبطیوں کا ہے جنہوں نے مذہب کی بنیاد پرمحمد مُرسی کی حمایت تو نہیں کی مگر کھل کر مخالفت بھی نہیں کی…میں قبطیوں کا وکیل نہیں اور نہ ہی اُن کے نظریات کاحامی ہوسکتا ہوں لیکن سرورِ کون و مکاں صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی ایک زوجہ مطہرہ جن کے بطن سے حضرت ابراہیم رضی اللہ تعالیٰ عنہ کی ولادت ہوئی وہ مصری قبطیہ تھیں جنہیں ہم حضرت ماریہ قبطیہ رضی اللہ تعالیٰ عنہا کے نامِ اقدس سے جانتے اور احترام کرتے ہیں اور شاید اِسی سبب میں قبطیوں کو عزت کی نگاہ سے دیکھتا ہوں…مگر کیا کہوں کہ آقا کے قلبِ اطہر پر اُترنے والے قرآن نے ہمیشہ ہماری فکروں اور اندازوں کو غلط قرار دیا …ایک دوسرے سے نفرت کے باوجود قرآن کا فیصلہ ہے کہ(مفہوماً عرض کرتا ہوں ) ”ہمارے پیارے ! آپ یہودونصاریٰ کومسلم دشمنی میں ایک پائیں گے “…اور آج مصر میں سبتیوں سے شدید عداوت کے اظہارمیں 322سے زائد کتابیں اور کتابچے چھاپنے اور تقسیم کرنے والے قبطی ، عدلی منصور اور البرادعی کی حمایت میں سگی ماں کی طرح اخوان المسلمین پر چِلاّ رہے ہیں…کلام الٰہی میں امثال کی منظر کشی صرف تصورات ہی میں ممکن نہیں ،ذرا غور فرمائیے تو آنکھوں کے سامنے لاتعداد مناظر امتیوں کو دعوتِ فکر دیتے نظر آتے ہیں…کل البرادعی کو وزیراعظم مقرر کروا کے یہود و نصاریٰ نے ایک فیصلہ سنایا ہے کہ ”اسلام دشمنی میں ہم ایک دوسرے کے ہمیشہ حامی و مددگار رہیں گے چاہے ہمارے درمیان لاکھ اختلافات ہی کیوں نہ ہوں“ اور بعض مسلم ممالک نے ”خیرمقدم“ کے ذریعے اُنہیں یہ جواب دیا ہے کہ ”ہم ہمیشہ قرآن پڑھتے رہیں گے لیکن اُس پر عمل نہیں کریں گے چاہے ہمیں موت ہی کیوں نہ آجائے“…!!!
http://beta.jang.com.pk/NewsDetail.aspx?ID=108886
www.aamirliaquat.com, Twitter:@AamirLiaquat
Photo

Post has shared content
محمودہ سلطانہ فائونڈیشن... دکھیاروں کی امداد کے لیے ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کا ساتھ دیجیے۔۔۔

محمودہ سلطانہ فائونڈیشن
دکھیاروں کی امداد کے لیے ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کا ساتھ دیجیے۔۔۔
آپ اپنی زکوٰۃ، خیرات، عطیات  یو بی ایل بینک میں جمع کرواسکتے ہیں

پاکستان میں عطیات جمع کروانے کے لیے:۔۔
بینک کا نام: یونائیٹڈ بینک لمیٹڈ، الرحمان برانچ، آئی آئی چندریگر روڈ، کراچی
اکائونٹ ٹائٹل: محمودہ سلطانہ فائونڈیشن
اکائونٹ نمبر 4-3033-010,
برانچ کوڈ: 1234
UNILPKKA سوئفٹ کوڈ:۔
فون نمبر: 0300.2086414

بیرون ملک عطیات جمع کروانے کے لیے:۔
بینک کا نام:
BANK OF AMERICA, USA
اکائونٹ ٹائٹل: محمودہ سلطانہ فائونڈیشن
اکائونٹ نمبر: 2173976243
وائر ٹرانسفر: 026009593
ٹیکس آئی ڈی: 45.4765986
آپ اپنے عطیات پے پال کے ذریعے بھی بھیج سکتے ہیں
اہل ایمان سے ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کی دردمندانہ اپیل!۔
روزہ افطار کرانے کا اجر راہِ الٰہی میں غلام آزاد کرانے کے مساوی ہے
روزہ افطار کرائیں
100روپے فی افطار پیکٹ
روزانہ ہزاروں افطار پیکٹس کی تقسیم

بھوکے کو کھانا کھانے والے پر فرشتے رحمت بھیجتے ہیں
مسکین کو کھانا کھلائیں
۔120  روپے فی پیکٹ
ایک وقت اور ایک شخص کے لیے

وزٹ کیجیے:
www.msftrust.org
Photo
Wait while more posts are being loaded