Post has attachment
زندگی! تم یہیں کہیں رہنا
میں زمانہ بدل کے آتا ہوں
Photo

قیامت خیز ہیں..... آنکهیں تمہاری
تم آخر خواب کس کے دیکهتے ہو؟

یہ چاہتیں یہ پذیرائیاں بھی جھوٹی ہیں
یہ عمر بھر کی شناسائیاں بھی جھوٹی ہیں

یہ لفظ لفظ محبت کی یورشیں بھی فریب
یہ زخم زخم مسیحائیاں بھی جھوٹی ہیں

مرے جُنوں کی حقیقت بھی سر بسر جھوٹی
ترے جمال کی رعنائیاں بھی جھوٹی ہیں

کُھلی جوآنکھ تو دیکھا کہ شہرِفُرقت میں
تری مہک تری پرچھائیاں بھی جھوٹی ہیں

فریب کار ہیں....... اِظہار کےوسیلے بھی
خیال و فکر کی گہرائیاں بھی جھوٹی ہیں

تمام لفظ و معانی بھی جھوٹ ہیں وقاص
ہمارے عہد کی سچائیاں بھی جھوٹی ہیں
Wait while more posts are being loaded