طلاق کا سبب ۔۔۔۔ !

کہتے ہیں ایک اعرابی نے اپنی بیوی کو طلاق دے دی کچھ لوگ اس کے پاس پوچھنے اور سبب معلوم کرنے آئے کہ اُس نے طلاق کیوں دی وہ کہنے لگا : کہ وہ ابھی عدت میں ہے ابھی تک وہ میری بیوی ہے مجھے اُس سے رجوع کا حق حاصل ہے میں اگر اس کے عیب تمہارے سامنے بیان کر دوں تو رجوع کیسے کروں گا ..؟؟

لوگوں نے انتظار کیا اور عدت ختم ہو گئی اور اس شخص نے رجوع نہیں کیا لوگ دوبارہ اُس کے پاس آئے تو
اس نے کہا : اگر میں نے اب اس کے بارے میں کچھ بتایا تو یہ اُس کی شخصیت مسخ کرنے کے مترادف ہوگا اور کوئی بھی اس سے شادی نہیں کرے گا !!

لوگوں نے انتظار کیا حتٰی کہ اس عورت کی دوسری جگہ شادی ہو گئی لوگ پھر اُس کے پاس آئے اور طلاق کا سبب پوچھنے لگے اس اعرابی نے کہا : اب چونکہ وہ کسی اور کی عزت ہے اور مروت کا تقاضا یہ ہے کہ میں پرائی اور اجنبی عورت کے بارے میں اپنی زبان بند رکھوں ۔۔ !!
دوسروں کے عیب چھوڑو صاحب ؛؛
کبھی اپنے سامنے بھی آئینہ رکھو ۔۔۔

یہ غارِ ثور میں بیٹھا ہوا اک سانپ کہتا ہے
نگاہوں کی تمنا ہے رخ سرکار کو دیکھیں

جسے ہو دیکھنا,صبروتحمُّل کا حسیں پیکر

وہ چل کے کربلا میں عابدِ بیمار کو دیکھیں

🌹🌷🌹🌷🌹🌷🌹🌷🌹
یاد آؤں تو بس اتنی سی عنایت کرنا
اپنے بدلے ہوئے لہجے کی وضاحت کرنا

تم تو چاہت کا سمندر ہوا کرتے تھے
کس سے سیکھا ہے محبت میں ملاوٹ کرنا
🌹 🌷🌹🌷 🌹 🌷 🌹 🌷

‏مُحبت خُود بَتاتـــــــــی ہے
‏کَـــہاں کِس کَا ٹِھکَانـــہ ہے

‏کِسے آنکھوں میں رَکھنا ہے
‏کِسے دِل مِیں بَــــــــسانا ہے

‏قرآن.. ﻟَﺎ ﺗُﺸْﺮِﻙْ ﺑِﺎﻟﻠَّﻪِ
ﺇِﻥَّ ﺍﻟﺸِّﺮْﻙَ ﻟَﻈُﻠْﻢٌ
ﻋَﻈِﻴﻢٌ ○ ﺍﻟﻠﮧ ﮐﮯ
ﺳﺎﺗﮫ ﺷﺮﮎ ﻧﮧ
ﮐﺮﻧﺎ، ﺷﺮﮎ ﺗﻮ
ﺑﮍﺍ ﺑﮭﺎﺭﯼ ﻇﻠﻢ
ﮨﮯ ○ #ﻟﻘﻤﺎﻥ 13"
Wait while more posts are being loaded