Post has attachment

Post has attachment
Photo

دولت کے نظام نے دنیا کو ایک جنگل میں تبدیل کردیا ہے. جس طرح جنگل کا یہ اصول ہے کہ یہاں وہیں جانور زندہ رہ سکتا ہے اور اچھا کھا پی سکتا ہے جو خوراک کو حاصل کرنے کا طاقت رکھتا ہو اسی طرح آج دنیا کے انسانوں کا یہی حال ہے، جو انفرادی طور پر اچھا کھانے اور اچھی زندگی گزارنے کیلئے دوسروں کا شکار کرتا ہے. اس مقصد کیلئے وہ کسی بھی حد تک جاسکتا ہے، وہ انسانیت کے دائرے سے باہر نکلتا ہے اپنے پیٹ کو پالنے کیلئے..
امریکہ اور دیگر سامراجی قوتوں نے اپنے اپنے پیٹوں کو پالنے کیلئے وقت کے ساتھ ساتھ دوسرے ملکوں کا شکار کیا ہے اور کر رہے ہیں‫. اور اس مقصد کے حصول کیلئے انہیں براہ راست بھی آنا نہیں پڑتا بلکہ وہ وہاں کے مقامی لوگوں اور مذہب کو استعمال کرتے رہیں ہے،،
شام بھی ان شکار شدہ ممالک میں سے ایک ہے.
اے خدا شام کی حفاظت فرما، اور انسانوں میں انسانیت پیدا کردے.

نور خالق نور...

#حلب
#شام

دنیا میں تباہی کے دو بڑے وجوہات مذاہب اور سیاست ہیں.
لاہور میں ہونے والے آج کے دردناک اور ظالمانہ سانحے کے پیچھے بھی ان دونوں میں سے ایک کا ہاتھ ہوگا.
بڑے افسوس کیساتھ کہنا پڑتا ہے کہ دنیا میں اس دہشتگردی اور خونریزی کا ذمہ دار انسان خود ہی ہے جس نے مذہب اور سیاست کے نام پر ایک دوسرے کو قتل کرکے جنت یا دولت و دنیا کی لالچ میں پڑھ کر انسانیت کو کُچل دیا ہے.

"نور خالق نور"

#lahoreblast
#terrorism
#pakistan
#humanity

سقراط جب زہر کا پیالہ پینے چلا تو اس وقت کے حاکموں اور اشرافیہ کے نمائندوں کو مخاطب کر کہ کہا کہ:
"تم لوگ مجھے مار کر اپنے خلاف بغاوت کی آواز کو بند کرنا چاہتے ہو.
اگر تم لوگ یہ چاہتے ہو کہ تمہارے خلاف بغاوت بند ہو جائے تو مجھے مارنے کی بجائے اپنی اصلاح کرو.

Post has attachment
Photo

Post has attachment
That´s it, by simple nature, and they can join together two, three or more (whatever the causes are), forming a type of social group, which only needs adequate laws, without so much controversy.

Marriage (between man and woman, of course) means more rights and obligations as for a gay union. In addition, the responsibilities are much greater, since it is responsible for reproduction, education, and the possible adoption of children. Gay marriage has nothing to do with reproduction, or with education and, much less, with the adoption of children.  

Therefore, the name of "marriage" is completely inappropriate for homosexual unions.
Photo

Post has attachment

آج میں جاوید چودھری صاحب کا ایک پروگرام دیکھ رہا تھا جس میں وہ جرمنی اور پاکستان کا موازنہ کرتا ہے.
جرمنی جو جنگِ عظیم دوم (2nd world war) میں شکست کھانے کے بعد مکمل طور پر مفلوج ہوئی تھی اور دو حصوں میں بٹ چکی تھی، اور اسی بد حالی کی وجہ سے کئی سال پہلے تک پاکستان اور دوسرے ممالک سے قرضے لیا کرتی تھی، آج پاکستان کے مقابلے میں پاکستان سے ہر شعبے میں آگے ہے..

اس پروگرام میں جاوید صاحب بتانا چاہتے ہیں کہ کیسے پاکستان جرمنی کیطرح طرقی کرکے آگے نکل سکتا ہے.

تب میں نے مندرجہ ذیل عبارت لکھی.

"پاکستان کے عوام جب تک غفلت کی نیند سے بیدار نہیں ہوتے تب تک ترقی کرنا ناممکن ہے..

پاکستان میں سب غربت، بد امنی، کرپشن، قتل و غارت، تعلیم سے دوری، اور اس طرح کے کئی اور باتوں کی ایک ہی وجہ ہے اور وہ ہے جہالت..

پاکستانی عوام کرپٹ لوگوں کو الیکشن میں کامیاب کرانے کیلئے ایک دوسرے کے سر توڑتے ہیں، حتیٰ کہ قتل وغارت بھی کرتے ہیں اور بعد میں وہی "لیڈرز" انہیں کا پیسہ اور حقوق مارتے ہیں..

بچے سے لیکر بوڑھے تک، غریب سے لیکر امیر تک، مردوں سے لیکر عورتوں تک، سب کرپشن اور جھوٹ میں مبتلا ہیں. حتیٰ کہ ایک ریڑھی والا بھی اپنے استطاعت کے مطابق کرپشن میں مبتلا ہے..

اگر پاکستان کو کامیاب اور خوشحال بنانا ہے تو یہ سب باتیں چھوڑنی ہوگی..

آندھی تقلید، کرپشن، آپس میں مسلکوں کے بنیاد پر قتل و غارت گری، وغیرہ سب کام چھوڑنے ہونگے.
تب جا کے پاکستان کی ترقی کا ظہور یقینی ہوسکتا ہے..."

(نور خالق نور)

Post has attachment
جب چھوٹے ہوا کرتے تھے تو یہیں کہتے پھرتے تھے کہ بڑے ہو کر ڈاکٹر بنے گیں اور انسانیت کی خدمت کرینگے، لیکن آج معاملہ اُلٹ گیا ہے اور ڈاکٹر صرف نام کے ڈاکٹر ہیں اور کام کے قصائی، دولت کمانے کی لالچ نے انسانیت کو مات دے دی ہے.
Photo
Wait while more posts are being loaded