Profile cover photo
Profile photo
‫سائنس قرآن کے حضور میں‬‎
78 followers
78 followers
About
Posts

Post has attachment
برطانوی مفکر ’چارلس رابرٹ ڈارون (۱۸۰۹ء۔۱۸۲۲ء) ، ایک ڈاکٹر کا بیٹااور ایک بایالوجسٹ تھا، اس نے اپنی تحقیقات سے ثابت کیا تھا کہ ہر جان دارنے درجہ بدرجہ ترقی کرکے ہی اپنی موجودہ اصلی شکل اختیار کی ہے۔اس کا کہنا تھا کہ، مثلاً زرافے نے اپنی موجودہ گردن اونچی اونچی شاخوں سے غذا حاصل کرنے کے لیے ہی رفتہ رفتہ لمبی کی تھی۔ وہ کہتا ہے کہ انسان نے بھی درجہ بدرجہ ترقی کرتے ہوئے ہی اپنی موجودہ انسانی شکل اختیار کی ہے۔ اس کا کہنا ہے کہ انسان کے آبا ؤ اجداد اپنی اصل میں بندر تھے۔وہ زور دیتا ہے کہ انسان پہلے ’انسا ن نما بندر ‘، پھر ’بندر نما انسان‘، اور پھر آخر کار ’ مکمل انسان ‘بن سکا ہے۔
ڈارون کے اس انکشاف نے سائنس دانوں کی ایک بڑی تعداد کو گویا ہلا کر رکھ دیا تھا اور وہ اس پر بلا تردّد ایمان رکھنے لگے ۔ حیرت انگیز طور پر آج کا ایک اعلیٰ تعلیم یافتہ یہودی، ربی اور سیکولر مسلمان بھی اس کے نظریے کی تائید کرتا ہوا نظر آتا ہے ۔وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ ڈارون کے نظریات و انکشافات شکوک و شبہات کی نذر ہونے لگے ۔ حیرت انگیز طورپر سائنسی تحقیق سے صورت حال ایک بالکل نئے انداز سے سامنے آنے لگی۔ معلوم ہو ا کہ حقائق وہ نہیں ہیں جو ڈارون نے پیش کیے تھے ،بلکہ حقائق اس کے ماسوا کچھ اور ہیں۔کیا ہم واقعی بندر سے انسان بنے ہیں ؟مکمل مضمون پڑھنے کےلیے درج ذیل لنک پر کلک کریں۔
http://quraniscience.com/2014/04/07/darwin-fraud-evolution-theory-and-piltdown-man-by-razi-uddin-syed/
http://quraniscience.com/theory-of-darwinism-is-wrong/
Photo
Add a comment...

Post has attachment
مزید تفصیل کے لیے درج زیل لنک پرکلک کرکےپورا مضمون پڑھیے۔ شکریہ
http://quraniscience.com/2011/09/26/life-style-and-communication-of-ants-and-quran/
Photo
Add a comment...

Post has attachment
نمازاور صحت جدید سائنس کی روشنی میں از ڈاکٹر نبیلہ ظہیر بھٹی
  نمازاور صحت جدید سائنس کی روشنی میں ڈاکٹر نبیلہ ظہیر بھٹی نماز سب سے افضل عبادت ہے۔یہ بدنی عبادت ہے۔قیامت کے دن سب سے پہلے نماز کے بارے میں ہی بازپرس ہوگی۔ نمازی کو یہ شعور ہوتا ہے کہ وہ اپنے پروردگار کے حضوراس کے حکم کی تعمیل میں حاضر ہے اور اس کے سامنے ...
Add a comment...

Post has attachment

Post has attachment

Post has shared content

Post has attachment

Post has attachment
Photo
Add a comment...

Post has attachment
چناچہ قرآن مجید اس آیت کریمہ میں انسان کو 2چیلنج کرتا ہے ۔اول یہ کہ انسان کبھی بھی مکھی نہیں بنا سکتا ،دوم یہ کہ اگر مکھی کوئی چیز ان سے چھین لے جائے تو وہ اسے واپس نہیں لے سکتے ۔جدید سائنسی تحقیقی نے اس بات کو ثابت کردیا ہے کہ قرآن مجید کے یہ دونوں دعوے بالکل برحق ہیں اور یہ قرآن کی سچائی کی ایک روشن دلیل ہے۔اس آیت کریمہ سے ایک اور نتیجہ بھی نکلتا ہے کہ جس طرح مکھی ایک کمزور مخلوق ہے ،انسان بھی اسی طرح ناتواں و بے کس ہے ۔
Add a comment...

Post has attachment
قرآن کی تین سورتوں میں حضرت یونس ؑ کو مچھلی کے نگل لینے کا واقعہ آیا ہے ۔ بعض ماڈرن حضرات اس واقعہ کی اصلیت کو شک کی نظر دیکھتے ہیں کہ آخر اتنے دن تک آپ ؑ بغیر کھائے پئے چاروں طرف سے بند ایک اند ھیر ی کوٹھری میں زندہ کیسے رہے ؟بات یہ ہے کہ معجزات ہمیشہ محیر العقول ہوتے ہیں ،جن کو دیکھنے اور سننے والے حیران وششدر رہ جاتے ہیں ،ان کو معجزہ کہا ہی اسی لیے جاتا ہے۔ لیکن بحرحال یہ ایک حقیقت ہے اور زیر نظر واقعات ہم اسی حقیقت کے تناظر میں پیش کررہے ہی ۔ ملاحظہ فرمائیں۔
Add a comment...
Wait while more posts are being loaded