Profile cover photo
Profile photo
Mohammed Ismail
3 followers
3 followers
About
Posts

Post has shared content
آپ سے مل کے ہم کچھ بدل سے گئے
 شعر پڑھنے لگے گنگنانے لگے
پہلے مشہور تھی اپنی سنجیدگی
اب تو جب دیکھیے مسکرانے لگے
آپ سے مل کے ہم کچھ بدل سے گئے۔۔۔
ہم کو لوگوں سے ملنے کا کب شوق تھا
محفل آرائی کا کب ہمیں ذوق تھا
آپ کے واسطے ہم نے یہ بھی کیا
ملنے جلنے لگے آنے جانے لگے
آپ سے مل کے ہم کچھ بدل سے گئے۔۔۔
ہم نے جب آپ کی دیکھی دلچسپیاں
آ گئی چند ہم میں بھی تبدیلیاں
اک مصور سے بھی ہو گئی دوستی
اور غزلیں بھی سننے سنانے لگے
آپ سے مل کے ہم کچھ بدل سے گئے ۔۔۔
آپ کے بارے میں پوچھ بیٹھا کوئی
کیا کہیں ہم سے کیا بدحواسی ہوئی
کہنے والی جو تھی بات وہ نہ کہی
بات جو تھی چھپانی بتانے لگے
آپ سے مل کے ہم کچھ بدل سے گئے۔۔۔
عشق بے گھر کرے عشق بے در کرے
عشق کا سچ ہے کوئی ٹھکانا نہیں
ہم جو کل تک ٹھکانے پہ تھے آدمی
آپ سے مل کے کیسے ٹھکانے لگے
پہلے مشہور تھی اپنی سنجیدگی
اب تو جب دیکھیے مسکرانے لگے
آپ سے مل کے ہم کچھ بدل سے گئے
شعر پڑھنے لگے گنگنانے لگے
آپ سے مل کے ہم کچھ بدل سے گئے۔۔۔
Add a comment...

Post has attachment

Post has attachment

Post has attachment

Post has attachment

Post has attachment
Add a comment...

Post has attachment
Add a comment...

Post has attachment

Post has attachment

Post has attachment
Wait while more posts are being loaded